موسمِ سرما میں صحت اورخوبصورتی کے راز

(By: Syeda Nasreen Faheem)     29, Dec 2016 | 05:25 pm

محترم قارئین :

    دسمبر کا مہینہ ہے اور مو سم سرما کا استقبال کیا جا چکا ہے ۔ گرم گرم کپڑے،کمبل بھی نکل آئیں ہیں ۔ ساتھ ہی مزیدار پکوان ، کافی ، چائے ، سوپ سب ہی کچھ کھایا پیا بھی جارہا ہے اور گرم بستروں میں خوب میٹھی نیند کے مزے بھی اٹھائیں جا رہے ہیں ۔ بچوں کی اسکول کی چھٹیاں ہیں موج اور مستیاں عروج پر ہیں گھومنا پھرنا اور آگ جلا کر ہاتھوں کو سیکنا اور کپکپا تے ہو ئے موسم سرما کا لطف اٹھا نا یہ کس کو اچھا نہیں لگتا؟ لیکن جہاں یہ سب موج مستیاں ہوں وہی احتیاطیں بھی ضروری ہیں کیونکہ صحت ہی میں خوبصورتی ہے اسلئے میرے معزز قارئین، آج میں آپکو موسم سرما میں صحت اور خوبصورتی کے وہ انوکھے راز سے آگاہ کر وں گی کہ جس پر عمل کر کے اس بار کی سردی آپ زیادہ انجوائے کریں گے اور وہ بھی مکمل صحت اور خوبصورتی کو برقرار رکھتے ہو ئے ۔ عموماً سردیوں کے موسم میں کھانسی ، نز لہ ، بخار یہ عام سی شکایات ہیں اسکے ساتھ ساتھ جلد کا پھٹنا ،خاص کر ہاتھ پاؤں کی جلد ، چہرے کی جلد ، ہونٹ وغیرہ اور بال کا گرنا اور اڑے اڑے رہنا بھی سردی کے موسم میں جھیلنا پڑتا ہے لیکن اگر آپ  کچھ  اپنی ڈائٹ پلان کو تبدیل کر لیں تو اس میں کو ئی شک نہیں کہ آپ کے سردی کے سارے گھمبیر مسائل ختم ہو جا ئیں گے ۔ اور آپ سردیوں کا صحیح لطف اٹھا سکیں گے ۔ کیونکہ اللہ تعالی نے اپنی مخلوق کے لئے بیش بہا نعمتوں کو تخلیق کیا ہے جن میں سے ایک خشک میوہ جات ہیں جو کہ ہما رے لئے سردیوں کا انمول تحفہ ہے ۔ سردیوں کا موسم  ہواور نمک لگے ہو ئے پستے مل جائیں تو آدھی سردی تو خود  ہی بھاگ جاتی ہے جی ہاں، پستے میں وٹامن بی پایا جاتا ہے  اس کے علاوہ کیلشیم اور پو ٹاشیم بھی اچھی خاصی مقدار میں ہو تے ہیں ۔ یہ سرد مو سم میں کھانسی سے بچا تا ہےاور بلغم کو صاف کرتا ہے  اسکے علاوہ اخروٹ ، کاجو ، با دام ، مونگ پھلی ، چلغوزے وغیرہ میں بھی بے شمار فوائد پو شیدہ ہیں جسکے استعمال سے صحت اور خوبصورتی برقرار رہتی ہے ۔ اسکے علاوہ سردیوں میں شکر قندی بھی وافر مقدار میں دستیاب ہو تی  ہے جو کہ نزلہ، زکام سے بچاؤ میں بے حد مفید ثابت ہو تے ہیں کیونکہ اس میں وٹا من اےاور وٹامن سی بھر پور مقدار میں موجود ہو تی  ہے جو کہ ان سردیوں کے امراض سے بچاتی ہے اور خون کے  خلیات کو مذید تشکیل دینے میں بھی مدد دیتی ہے ۔ اسی طرح انار بھی ہے جس جو کہ ایک جنتی پھل ہے اور اپنی

Ellagic Acid  غذائیت کے حوالے سے بہت مفید ہے ۔ اسکے اندر وٹامن سی اور

نامی اینٹی آکسیڈینٹ جلد کے لئے بہت مفید ہے جو کہ جلد کو اندر اور باہر دونوں سے زندگی بخشتا ہے جسکی وجہ سے آپکی جلد سردیوں میں بھی  نکھری نکھری رہتی ہے کیونکہ انار کا استعمال خون کی روانی کو بھی بہتر بنا تا ہے ۔ اسکے علاوہ چقندر  کھائیں جو کہ وٹامنز کا خزانہ شمار کیا جاتا  ہے یہ بہت مفیداور مزیدار سبزی ہو تی ہے اسے سردیوں میں با قاعدہ کھانے سے آپکی صحت اور خوبصورتی دونوں اچھی رہتی ہے اور ساتھ ہی ترش پھلوں کا استعمال بھی سردیوں میں خاص بڑھا دیں  کیونکہ یہ  ترش پھل خاص کر سردیوں میں بہت کارآمد ہو تے ہیں یہ کینسر جیسے مہلک مرض کا خاتمہ کرتے ہیں اور جلد کی صحت کو بھی  برقرار رکھتے ہیں ۔ ان  ترش پھلوں کا جوس بنائیں یا پھر ویسے ہی کھائیں اس بار سردیوں میں اسے ضرور انجوائے کریں ۔

ساتھ ہی سرد موسم کے حوالے سے میں آپکو یہ بھی آگاہ کرتی چلوں کہ چا ہے موسم کوئی سا بھی ہو مگر الرجی کسی بھی موسم میں ہو سکتی ہے ۔ یہ آپ کی قوت مدافعت کو کمزوز کردیتی ہے جس کی وجہ سے آپ بہت سی جلدی بیماریوں میں مبتلا ہو جاتے ہیں اور ہر وقت اپنے اندر تھکان محسوس کرتے ہیں یوں تو الرجی کسی بھی موسم میں ہو سکتی ہے مگر خاص کر بدلتے موسم میں ہو نے والی الرجی حد درجہ خطرناک سمجھی جا تی ہے ۔ بعض اوقات سردی کا موسم گزرنے کے بعد بھی الرجی کے علامات نظر آتے ہیں جن میں چھنیکیں آنا ، جسم پر خارش ، بخار رہنا ، آنکھوں کا جلنا وغیرہ شامل ہیں ذار سی احتیاط آپکو اس سردی کے موسم میں بیماری کے یلغار سے بچا سکتی ہے ۔ جیسے ہا تھوں کو با قاعدہ دھوئیں تو جراثیم کو جسم کے اندر داخل ہو نے کا موقع نہیں ملتا، گرم پانی کا استعمال کریں کیونکہ یہ جراثٰیم کو مارنے میں مدد دیتا ہے ساتھ ہی ساتھ ادرک اور ہلدی کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں کیونکہ یہ سردیوں میں مدافعت کو بڑھا تا ہے جسکی وجہ سے انسان الرجی سے پیدا ہو نے والے جراثیم سے محفوظ رہتا ہے ۔

          تو کیا خیال ہے؟ اس بار کی سردی ہو جائے مکمل صحت اور خوبصورتی کے ساتھ! تو ان خوبصورتی اور صحت کو برقرار رکھنےکے  انوکھے راز سے فائدہ اٹھائیں اور موسم سرما کو خوبصورت اور یادگار بنائیں      شکریہ !

Share this page:

0 Comments

Write a Comment

Your email address will not be published.
Required fields are marked *