!!!...زرا سوچیۓ

!!!...زرا سوچیۓ

(By: Syeda Nasreen Faheem)

قارئین ! یہ زندگی اللہ کی سب سے بڑی نعمتوں میں سے بلاشبہ ایک بہترین نعمت ہے مگر شرط یہ ہے کہ اس کو اسی کے تقاضوں کے مطابق گزارا جاۓ ورنہ یہ ہی نعمت وبال بننے میں دیر نہیں لگاتی۔ یہ زندگی اور اس سے جڑے خوبصورت رشتے ہرایک رشتہ اپنی اپنی جگہ ایک الگ اور منفرد مقام رکھتا ہے ان رشتوں کو صحت مند اور ہمیشہ قائم رکھنے کے لیۓ اسکی آبیاری خلوص،محبت اور اعتماد سے کی جاتی ہے۔لیکن جب ان رشتوں میں دیکھاوا ،انا ،جھوٹ،تہمت ،اپنی بڑائی یعنی واہ واہ والی خصلتیں جنم لے لیتی ہیں تو یہ خوبصورت ترین رشتوں کا پھول انتہایٔ تکلیف کے ساتھ ٹوٹ کر بکھر جاتا ہے۔

 ؀              رد  دے کر چاہتے  ہو کہ  تکلیف  نہ  ہو     
 میں انسان  ہوں  کو ئی  مجسمہ  تو  نہیں                            
 انسان جسں کی عمر تقریبا ساٹھہ ، ستر سال کے بعد ریڈ زون میں چلی جاتی یے پھر صرف کف افسوس کے کچھ ہاتھ نہیں آتا۔ یہ ہر رشتے اللہ کی نعمت ہیں چاہے ماں باپ کا رشتہ ہو۔ بہن بھایٔ کا رشتہ ہو یا میاں بیوی کا اوران سے جڑے ہر رشتوں کا اپنی جگہ بہت احترام ہے اگر انسان ایک رشتے کو دوسرے رشتے پر حد درجہ فوقیت دینے لگتا ہے تو یقینا دوسرے ہر رشتے بھی آپکی ہی ذات سے وابسطہ ہیں جو کہ نظر انداز ہونے کی وجہ سے بری طرح متاثر ہوتے ہیں ۔رشتوں میں دراڑیں اس وقت پیدا ہوتی ہیں جب ہر کوئی اپنے آپ کودوسرے سے زیادہ بہتر سمجھنا شروع کر دیتا یے اور چاھتا یے کہ صرف اسکی ہی واہ واہ ہو ہر کویٔ بس اسکے ہی آگے پیچھے کرتا نظر آۓ لیکن جب وہ ایسا نہیں پاتا توآپس میں چھوٹی چھوٹی باتوں پر اوراگر باتیں نہ ہوں تو چھوٹی اور جھوٹی باتوں کے ذریعے جھگڑا کر کے اپنی انا کو تسکین پہچائی جا تی ہے

پھر یہ عادت بڑھتے بڑھتے سخت نفرت کی صورت اختیار کرلیتی ہے ۔لہذا میری گزارش ہے کہ رشتوں میں مٹھاس پیدا کیجیے یقین جانیے کہ رشتوں کی خوبصورتی ایک دوسرے کی تذلیل کرنے کے بجاۓ ایک دوسرے کو عزت دینے میں ہے کیونکہ یہ رشتے بہت مقدس ہوتے ہیں ان کو اپنی جھوٹی انا کے خول میں تباہ و برباد نہ ہونے دیں کیونکہ جو آپکی ہر وقت واہ واہ کر رہے ہیں آپکے سچے  ہمدرد نہیں ہیں کیونکہ سچے ہمدرد وہ ہی ہوتے ہیں جو آپکی تعریف نہیں بلکہ آپکو   آپکی خامیاں بھی بتاتے ہیں آنکھیں کھولیں اور دیکھنے کی     کوشیش کریں ۔ مفادات سے بھری اس دنیا میں جو  آپکے پاس رش لگاۓ کھٹرے ہیں وہ کسی نہ کسی مفاد کی وجہ سے ہیں ورنہ جو لوگ آپ سے پیار کرتے ہیں وہ تو کہیں چھپ کر آپکے لیے دعاگو ہیں۔         
                         زرا سوچیۓ ۔..!!!۔                                                     

Share this page:

0 Comments

Write a Comment

Your email address will not be published.
Required fields are marked *